یوٹیوب ویڈیو کا تجربہ لڑکی کی موت کا باعث بن گیا 107

یوٹیوب ویڈیو کا تجربہ لڑکی کی موت کا باعث بن گیا

یوٹیوب پر جو کچھ دکھایا جاتا ہے ضروری نہیں ہر ایک ویسا کر بھی سکے درحقیقت کئی بار یہ کوشش جان لیوا بھی ثابت ہوسکتی ہے۔

چین میں ایک نوعمر لڑکی اس لیے جان کی بازی ہار گئی کیونکہ اس نے مشہور چینی یوٹیوب اسٹار کی ویڈیو سے متاثر ہوکر پاپ کارن بنانے کی کوشش کی۔

اگست میں صوبہ شانگ ڈونگ سے تعلق رکھنے والی 14سالہ زی زی اور 13 سالہ شیائو نے یوٹیوب ککنگ اسٹار مس یا کی 2017 کی ایک ویڈیو کی نقل کرنے کی کوشش کی، جس میں پاپ کارن کو سوڈا کین میں بنانا تھا اور اس مقصد کے لیے الکحل لیمپ استعمال کیا جو پھٹ گیا۔

بی بی سی کے مطابق یہ لڑکیاں الکحل کو سوڈا کین کے اندر گرم کررہی تھیں کب وہ پھٹ گیا۔

حادثے میں زی زی کا جسم 96 فیصد جھلس گیا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے وہ 5 ستمبر کو چل بسی، جبکہ دوسری لڑکی کا 13 فیصد جھلس گیا اور اب اسے کاسمیٹک سرجری کی ضرورت ہوگی۔

یوٹیوب اسٹار مس یا جن کا اصل نام زائو شیائو ہے، نے 10 ستمبر کو چینی سوشل میڈیا سائٹ ویبو پر کہا کہ وہ لڑکیاں ان کے طریقہ کار پر عمل نہیں کررہی تھیں۔

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ

ان کے بقول’زی زی میری ویڈیو کی نقل نہیں بلکہ کسی اور ویڈیو کے طریقے کو آزما رہی تھی، حالیہ دن میری زندگی کے تاریک ترین دن تھے’۔

انہوں نے لکھا’میں نے متعدد بار زی زی کے لیے کرشمے کی دعائیں کیں، مگر وہ قبول نہیں ہوئیں، اب میرا دل ٹوٹ چکا ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ زی زی کے گھر والوں کو معاوضہ دیں گی جبکہ شیائو کی کاسمیٹک سرجری بھی کروائیں گی۔

2017 کی اوریجنل ویڈیو کو ڈیلیٹ کیا جاچکا ہے مگر اسے دیگر افراد نے ری پوسٹ کررکھا ہے۔

مس یا کے مطابق اوریجنل ویڈیو میں لوگوں کو اس طریقے کے حوالے خبردار کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں