201

آکسفورڈ یونیورسٹی لندن میں سٹوڈنٹس یونین کے الیکشن، بنگلادیشی طالبہ صدر منتخب —

آکسفورڈ یونیورسٹی لندن میں سٹوڈنٹس یونین کے الیکشن، بنگلادیشی طالبہ صدر منتخب —
لندن (ویب ڈیسک ) بنگلہ دیش سے تعلق رکھنے والی طالبہ #انیشہ_فارُک الیکشن جیت کر یونین کی صدر بن گئی۔ اب یونیورسٹی انتظامیہ کی ہر میٹنگ میں انیشہ تمام طلباء کی نمائندگی کریگی- اسکے بغیر پورے آکسفورڈ یونیورسٹی کی انتظامیہ ایک فیصلہ نہیں کرسکتی!
یونیورسٹی انتظامیہ طلباء فیسوں کے ایک ایک روپیہ کا حساب انیشہ کیساتھ کریگی!

اب آکسفورڈ کا کوئی طالب علم احتجاج نہیں کریگا اپنا قیمتی وقت ضائع نہیں کریگا بلکہ یونین صدر کو ایک میسج یا درخواست کرکے مسئلہ حل ہوگا- یہ ہوتی ہے مُھذب قوم ،مھذب ادارے !
وہی لوگ ترقی کرتے ہیں جو مُھذب ہوتے ہیں جن لوگوں میں انسانئیت ہوتی ہے!

اگر انیشا پاکستان میں طلباء کے حقوق کیلئے آواز اُٹھاتی تو یونیورسٹی انتظامیہ پولیس کے ذریعے اسکا سر پھاڑتی گھر والوں کو کال کرتی کہ انیشا ڈسپلن کی خلاف ورزی کرتی ہے!
انیشا کو پچاس ہزار روپے جُرمانہ کیا جاتا، انیشا کو جیل میں ڈالا جاتا اور معزز پروفیسرز صاحبان اسکو جنسی طور پر حراساں کرتے..

یاد رہے آکسفورڈ یونیورسٹی ہر ہفتے میں یونین کے صدر کیساتھ میٹنگ کرتی ہے کہ طلباء کو اگر کوئی مسلہ درپیش ہو تو بتائیں اور وہ مسئلہ ایک دن میں حل ہوجاتا ہے-

انیشا فارُک کیلئے نیک تمنائیں !!!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں